161

پاکستان کی تاریخ کا ایک سیاہ دن تین مارچ۔۔۔۔۔ پاکستان کی تاریخ کا ایک سیاہ دن سانحہ عباس ٹاوٗن کراچی #ABBASTOWN #3MARCH #SHIAKILLING

پاکستان کے سب سے زیادہ گنجان آباد شہر کراچی کے مصروف اور پر رونق علاقے گلشن اقبال سے متصل ایک شیعہ آبادی کودہشتگردوں نے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں پینتالیس افراد شہید اور ایک سو پینتیس دیگر زخمی ہوگئے تھے

تین مارچ دو ہزار تیرہ کے دن کو پاکستان کی تاریخ میں ایک سیاہ باب کے طور پر ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

پاکستان کے سب سے زیادہ گنجان آباد شہر کراچی کے مصروف اور پر رونق علاقے گلشن اقبال سے متصل ایک شیعہ آبادی کودہشتگردوں نے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں پینتالیس افراد شہید اور ایک سو پینتیس دیگر زخمی ہوگئے تھے۔

مغرب کے وقت عباس ٹاون نامی شیعہ آبادی کے داخلی راستے پر ایک دھماکہ خیز مواد سے لدی ہوئی گاڑی دھماکے سے تباہ ہوگئی جس نے آس پاس موجود فلیٹوں کو مسمار کر کے رکھ دیا۔

اس دھماکے کے نتیجے میں اس سڑک پر موجود افراد سمیت فلیٹوں کے مکین بھی اپنی قیمتی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

تقریبا چالیس سے پچاس فلیٹس بھی مکمل طور پر تباہ ہوگئے، دھماکے سے ایک خوفناک آگ بھڑک اٹھی جس نے فلیٹوں اور انکے نیچے دکانوں میں موجود سامان کو جلا کر راکھ کر دیا۔

دھماکہ اتنا شدید تھا کہ جس سے چار فٹ گہرا اور دس فٹ چوڑا گڑھا بن گیا۔ دھماکے سے سات سو میٹر کا علاقہ متاثر ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں