141

نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں پی ایس ایل کی اختتامی تقریب

نجم سیٹھی کا کہنا تھا کہ کراچی میں 9 سال بعد کرکٹ واپس آرہی ہے جس کے لیے کراچی والو! آپ کو مبارک ہو، پی ایس ایل میرا ہے نہ کسی سیاسی جماعت کا بلکہ یہ پاکستانیوں کا ٹورنامنٹ ہے۔

چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ یہ ایک تاریخی موقع ہے، کراچی والوں کی دعائیں قبول ہوگئیں۔

—فوٹو: پی ایس ایل ٹویٹر
—فوٹو: پی ایس ایل ٹویٹر

انھوں نے کہا کہ پی ایس ایل کے بعد ان شاءاللہ ویسٹ انڈیز کی ٹیم دورہ کرے گی۔

—فوٹو:ڈان نیوز
—فوٹو:ڈان نیوز
—فوٹو: پی ایس ایل ٹویٹر
—فوٹو: پی ایس ایل ٹویٹر

کراچی میں پی ایس ایل کے فائنل کے لیے انتظامات کے حوالے سے سے نجم سیٹھی نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ نے انتھک محنت کی اور ہمارا ساتھ دیا جبکہ تمام سیکیورٹی اداروں نے ہمیں تحفظ فراہم کیا اور ہمیں پاک فوج اورسیکیورٹی اداروں کی خدمات کو یاد رکھنا چاہیے۔

نجم سیٹھی کے خطاب کے بعد گلوکارہ آئمہ بیگ، فرحان سعید، شہزاد رائے، اسٹرنگز اور علی ظفر نے اپنی آواز کا جادو جگایا۔

—فوٹو: ڈان نیوز
—فوٹو: ڈان نیوز
—فوٹو: ڈان نیوز
—فوٹو: ڈان نیوز

اسلام آباد یونائیٹڈ کے کپتان جے پی ڈومینی نے تقریب کے دوران اسٹیج میں آ کر سلام کیا اور پی ایس ایل کے لیے کیے گئے انتظامات اور سیکیورٹی کے حوالے سے اطمینان کا اظہار کیا۔

—فوٹو: ڈان نیوز
—فوٹو: ڈان نیوز

پشاور زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی اور فاسٹ باؤلر حسن علی بھی گلوکاروں کی پرفارمنس پر جھوم اٹھے۔

ڈیرن سیمی نے اس موقع پر پشتو میں اردو میں بات کی.

پشاور کے کپتان نے کہا ‘پخیرراغلے ،کیسے ہو کراچی، ہم یہاں جیتنے کے لیے آئے ہیں اور آخر میں پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگایا.

—فوٹو: ڈان نیوز
—فوٹو: ڈان نیوز

پشاور زلمی اور اسلام آباد یونائیٹڈ کا ٹکراؤ

پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے تیسرے ایڈیشن کا فائنل آج کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں دفاعی چیمپیئن پشاور زلمی اور سابق چیمپیئن اسلام آباد یونائیٹڈ کے درمیان کھیلا جائے گا۔

پی ایس ایل کے ابتدائی2 ایڈیشنز کے فائنل میچ دبئی اور لاہور میں ہوئے تھے اور یہ پہلا موقع ہے کہ کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں پاکستان سپر لیگ کا کوئی میچ کھیلا جا رہا ہے جس کی بنا پر شہر بھر خاص طور پر اسٹیڈیم آنے والے تمام راستوں کو غیر ملکی اور قومی کھلاڑیوں کے پورٹریٹس سے سجا دیا گیا ہے۔

اس میچ کے ساتھ ہی نیشنل اسٹیڈیم تقریباً 9 سال بعد پہلی مرتبہ کسی عالمی سطح کے مقابلے کی میزبانی کرے گا اور غیر ملکی کرکٹرز ایکشن میں نظر آئیں گے، جہاں آخری مرتبہ فروری 2009 میں اس میدان پر پاکستان اور سری لنکا کے درمیان ٹیسٹ میچ کھیلا گیا تھا۔

خیال رہے کہ نیشنل اسٹیڈیم میں تقریباً 32 ہزار سے زائد تماشائیوں کے بیٹھنے کی گنجائش ہے اور فائنل میچ کو دیکھنے کے لئے ٹکٹ صرف 2 روز میں فروخت ہوگئے تھے۔

پی ایس ایل فائنل دیکھنے کے لیے شائقین کی بڑی تعداد پارکنگ کی مقام پہنچنا شروع ہوگئی جبکہ شٹل سروس کا آغاز کردیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں