41

اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 15 سالہ نوجوان شہید

غزہ کی سرحد پر احتجاج کے دوران اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا 15 سالہ نوجوان دم توڑ گیا۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق ’گریٹ ریٹرن مارچ‘ کے سلسلہ میں جمعہ کے روز غزہ کی سرحد پر احتجاج کیا گیا، صیہونی فورسز نے وحشیانہ کارروائیاں کرتے ہوئے نہتے مظاہرین پر براہ راست گولیاں برسائیں اور آنسو گیس کی شیلنگ کی۔

شمالی غزہ کے علاقے جبالیہ میں احتجاج کے دوران اسرائیلی فوج کی براہ راست فائرنگ سے 15 سالہ نوجوان زخمی ہوا جسے طبی امداد کے لیے جانے والی میڈیکل ٹیم پر بھی گولیاں چلائی گئیں اور آنسوگیس کے شیل فائر کیے گئے۔
فلسطین کی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ مقامی اسپتال میں زیرعلاج 15 سالہ نوجوان ’میسرا موسیٰ علی ‘ زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد ہفتے کے روز دم توڑ گیا۔ اسرائیلی فوج کی وحشیانہ کارروائیوں کے نتیجے میں 66 افراد زخمی بھی ہوئے جن میں 15 بچے اور 8 خواتین شامل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں