24

امریکا کی خلیجی ممالک میں موجودگی ’خطرہ‘ نہیں ’ہدف‘ ہے، ایرانی کمانڈر

پاسداران انقلاب کے کمانڈر نے کہا ہے کہ امریکی افواج کی خلیجی ملک میں موجودگی ہمارے لیے دھمکی یا خطرہ نہیں بلکہ ہمارا ہدف ہے جسے ہم آسانی سے نشانہ بناسکتے ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق پاسداران انقلاب کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ قطر میں امریکی بحری بیڑے اور جیٹ فائٹر بی-52 طیاروں کی موجودگی ایران کے لیے خطرہ نہیں بلکہ ہدف ہے جسے ہم آسانی سے نشانہ بناسکتے ہیں۔

پاسداران انقلاب کی جانب سے بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب امریکا نے اپنے جیٹ فائٹرز طیارے بی-52 قطر میں اپنے فوجی کیمپ منتقل کیے اور طیارے بردار ایک بحری بیڑا بھی قطر کے لیے روانہ کیا ہے۔ امریکا نے یہ اقدامات ایران کی جانب سے عالمی جوہری معاہدے کی بعض شقوں سے دستبرادی کے بعد اُٹھائے۔
یہ خبر بھی پڑھیں : آبنائے ہرمز کے نزدیک سعودیہ سے امریکا کے لیے تیل لے جانے والے بحری جہازوں پر حملہ

ایران اور امریکا کے درمیان تناؤ سے خلیجی ممالک میں کشیدگی کی صورت حال پیدا ہوگئی ہے اور گزشتہ روز آبنائے ہرمز کے نزدیک متحدہ عرب امارات کی بندرگاہ الفجیرہ پر دو تیل بردار سعودی بحری جہازوں پر حملہ کیا گیا، تاہم حملہ آوروں کا معلوم نہیں ہوسکا ہے۔ ایران کئی بار آبنائے ہرمز کو بند کرنے کی دھمکی دے چکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں